عمرخالدنے عدالت میں درخواست داخل کی

ڈیڑھ ماہ میں بھی الزامات کاپتہ نہیں،
عمرخالدنے عدالت میں درخواست داخل کی
نئی دہلی 5جنوری(آئی این ایس انڈیا)
دہلی تشددکیس میں جیل میں بند جے این یو کے سابق لیڈر عمر خالد نے عدالت میں معاملہ اٹھایا ہے۔ عمر خالد نے عدالت میں کہا ہے کہ چارج شیٹ داخل ہونے کو ڈیڑھ ماہ ہوئے ہیں ، لیکن اب تک وہ نہیں جان سکے کہ ان پر کیا الزامات ہیں۔عمر خالدنے منگل کے روز دہلی کی کارکارڈوما عدالت کے سامنے سماعت کے دوران اپنا اعتراض پیش کیاہے مقدمات چل رہے ہیں۔ عمر خالد نے کہا ہے کہ ان کی چارج شیٹ کی کاپی ان کے منصفانہ سماعت کے حق کے خلاف نہیں ہے۔عمر خالد جن پریواے پی اے جیسے سنگین حصوں میں الزام عائد کیاگیا نے اعتراض پیش کیاہے۔ عدالت کی جانب سے حکومت کوبتایاگیاکہ اس میں کوئی حرج نہیں ہے اور عمر خالد کو جیل کے کمپیوٹر پر چارج شیٹ کی ایک کاپی فراہم کی جائے گی ، جسے وہ پڑھ سکیں گے۔اسی دوران سماعت کے دوران دوسرے ملزم شرجیل امام اور اطہر خان نے بھی بات کی۔ شرجیل نے منصفانہ مقدمے کی سماعت کا مطالبہ کیا اور کہاہے کہ جب تشدد ہوا تو وہ جیل میں یھے اور اس میں ان کا کوئی کردار نہیں ہے۔ اسی دوران ، اطہر خان نے عدالت کو بتایا کہ جب بھی وہ میڈیکل چیک اپ کے لیے باہر جاتے ہیں تو وہ قید میںہوتے ہیں یہاں تک کہ انھیں اپنے وکیل سے ملاقات کی اجازت نہیں ہے۔ اطہر خان نے کہاہے کہ ہر روز جیل جانے والے جیل اہلکار قید نہیں ہوتے بلکہ میں ہربار ہوتا ہوں۔اطہر خان کی شکایت پر ملزم کی عدالتی تحویل میں 19 جنوری تک توسیع کردی گئی ہے۔ہمیں بتادیں کہ دہلی پولیس کے خصوصی سیل نے گذشتہ سال نومبر کے آخری ہفتے میں یو اے پی اے کے تحت گرفتار عمر خالد کے خلاف چارج شیٹ داخل کی تھی۔
کچھ لوگ میڈیامیں رہنے کے لیے کچھ بھی بول دیتے ہیں
اکھلیش یادوپرنتیش کمارکاطنز،ویکسینشن کی تیاریوں کاجائزہ لیا
پٹنہ 5جنوری(آئی این ایس انڈیا)
بہارحکومت نے کورونا ویکسینیشن کے لیے تیاریاں مکمل کرلی ہیں۔ وزیراعلیٰ نتیش کمار نے یقین دلایا ہے کہ ریاستی حکومت نے ویکسین کی تقسیم تک مکمل تیاری کرلی ہے۔ نتیش کمار نے ویکسین نہ لینے پر یوپی کے سابق وزیراعلیٰ اکھلیش یادو پر طنز کیا ہے اورکہاہے کہ کچھ لوگ میڈیا میں رہنے کے لیے کچھ بھی بولتے ہیں۔ہندوستان میں ، وزارت صحت ، ڈی سی جی آئی نے حتمی استعمال کے لیے دو ویکسین کوویشیلڈ اور کوواکسن کو منظور کیاہے۔جس کاٹرائل ہی چل رہاہے۔ 2 جنوری کو پورے ملک میں ویکسینیشن کے حوالے سے ایک ڈرائی رن بھی کیا گیا تھا۔ اب کسی بھی دن بھارت میں کورونا کی ویکسینیشن شروع ہوسکتی ہے۔بہار کے سی ایم نتیش کمار نے کہاہے کہ مرکزکے ہدایت نامہ کے مطابق کوویڈ۔19 ویکسین پہلے طبی کارکنوں کو پیش کی جائے گی ، جس کے بعد پولیس اور انتظامیہ سمیت عوامی نمائندے کودیے جائیں گے۔نتیش کمار نے کہا ہے کہ ملک میں کورونا ویکسین بڑے پیمانے پر استعمال کی جائے گی۔ بہار میں بھی ، ویکسین کی بحالی اور تقسیم کے لیے مکمل تیاریوں کا آغاز کردیا گیا ہے۔ بہار میں پہلے ویکسین کے محکمہ کے عملے سمیت ڈاکٹروں اور طبی کارکنان کو لگائے جائیں گے۔نتیش کمار نے یقین دلایا کہ جب بھی کوویڈ۔19 ویکسین بہار میں پہنچے گی ، تو یہ لوگوں کو موثر انداز میں مہیا کی جائے گی۔ بہار کے وزیراعلیٰ نے کہاہے کہ بہار حکومت مرکزی حکومت کے رہنما اصولوں کے مطابق بھی کام کرے گی اور یہ ویکسین 50 سال سے زیادہ عمر والوں کودی جائے گی۔ویکسی نیشن پروگرام کی خاکہ دیتے ہوئے نتیش کمار نے کہا کہ ویکسین کہاں رکھی جائے گی ، اس کو ایک جگہ سے دوسری جگہ کیسے منتقل کیا جائے گا اور اس علاقے میں ویکسینیشن پروگرام کس طرح سے چلایا جائے گا اس بارے میں تمام تیاریاں کی گئیں۔ میں یقین دلانا چاہتا ہوں کہ بہار میں ویکسی نیشن کا پروگرام موثر انداز میں چلایا جائے گا۔اسی وقت ، نتیش کمار نے کوویڈ 19 ویکسین کو بی جے پی ویکسین قرار دینے پر اترپردیش کے سابق وزیراعلیٰ اکھلیش یادو پر طنزکیاہے اورکہاہے کہ کچھ لوگ میڈیا میں بنے ہونے کی بات کرتے ہیں۔نتیش کمارنے کہاہے کہ کون کیا بولتا ہے ، مجھے اس میں زیادہ دلچسپی نہیں ہے۔ کسی کو کچھ بولنے کی عادت ہے ، بات بولنے سے خبرچھپی ہے ، اسی وجہ سے کچھ لوگ بولتے ہیں۔وزیراعلیٰ نتیش کمار نے کہاہے کہ وہ جلدہی جنتا عدالت میں اپنا پرانا پروگرام دوبارہ شروع کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں