روزہ رکھکر ووٹ کریں۔مختاراشرف

روزہ رکھکر ووٹ کریں۔مختاراشرف
نئی دہلی(پریس ریلیز)رجب اللہ کا مہینہ شعبان نبی کا مہینہ اور رمضان نبی کے امتیوں کا مہینہ ہے رمضان کی آمد کے ساتھ ہی استقبال رمضان کا دور شروع ہوتا ہے عبادات کی کثرت ہوتی ہے بندے طلوع آفتاب سے غروب آفتاب تک رضاء مولا کے لئے بھوکے پیاسے رہتے ہیں ان تمام باتوں کااظہار جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اسکالر مختار اشرف صاحب نے قرول باغ کی لال مسجد میں جمعہ کے خطاب میں کیا اشرف صاحب نے کہا کہ رمضان المبارک حق و باطل کا پہلا معرکہ ہوا نبی کے ساتھ صحابہ نے روزکی حالت میں جنگ لڑی خدا نے روزہ داروں کی چھوٹی سی جماعت کو باطل کے ہزار لشکریوں پر غلبہ عطا فرمایا ملک کی موجودہ صور ت حال یہ ہے کہ آئینی اداروں پر نفرت کی سیاست کرنے والوں کا قبضہ ہے دستور ہند کا دیا گیا ہتھیار ووٹ ہے روزہ رکھ کر اس طاقت کا استعمال 12مئی کو ہو رہی ووٹنگ میں کرکے نفرت کو ہرائیں ،مزید کہا کہ روزہ کے روحانی فوائد کے ساتھ بدن کی غیر ضروری چیزوں کو خارج کرکے جسمانی بیماری دور کرتا ہے تو وہیں ووٹ کا سحیح استعمال ملک سے بد عنوانی ختم کرنے کا ذریعہ ہے،روزہ رکھکرتعلیم صحت اور روزگار کیلئے عآپ کو ووٹ کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں