مودی کا رویہ پاکستان کے وزیراعظم کے مماثل

ملک کے وفاقی ڈھانچہ کو نقصان پہنچانے کا الزام:اروند کجریوال
نئی دہلی ۔ 11 فبروری ۔(سیاست ڈاٹ کام) دہلی کے وزیراعلی و عام آدمی پارٹی کے لیڈر اروند کجریوال نے الزام لگایا کہ وزیراعظم مودی پاکستان کے وزیراعظم کی طرح رویہ اختیار کئے ہوئے ہیں تاکہ ہندوستان کے وفاقی ڈھانچہ کو متاثر کیا جاسکے ۔انہوں نے دہلی کے اے پی بھون میں اے پی کے وزیراعلی این چندرابابونائیڈو کی ریاست کو خصوصی درجہ کے مطالبہ پر ایک روزہ بھوک ہڑتال میں شرکت کی اور ان سے یگانگت کا اظہار کیا ۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کجریوال نے کہا کہ مودی پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا ۔انہوں نے کہاکہ وزیراعلی اور آندھراپردیش سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے ریاست کے لئے خصوصی درجہ کے مطالبہ پر احتجاج کیا ہے ۔وزیراعظم نے تین مرتبہ کھلے عام اعلان کیا تھا کہ اے پی کے لئے خصوصی درجہ دیا جائے گا۔وہ دنیا کے دنیا کے سب سے بڑے جھوٹے ہیں ۔وہ جو کچھ بھی کہتے ہیں اس کو پورا نہیں کرتے ۔یہاں تک کہ امیت شاہ جو بھی کہتے ہیں وہ صرف جملہ بازی ہوتا ہے ۔یہ دعوی کرتے ہوئے کہ مودی نے تروپتی کے جلسہ میں اے پی کو خصوصی درجہ دینے کا وعدہ کیا تھا ،انہوں نے کہاکہ وہ اپنے وعدے سے انحراف کرگئے ۔انہوں نے کہاکہ ایک ایسا شخص جس نے مندروں کے اس شہر میں یہ وعدہ کیا تھا ، وہ اس سے منحرف ہوگیا یہ افسوسناک بات ہے ۔جس طرح وہ غیر بی جے پی ریاستوں والی حکومتوں کے ساتھ رویہ اختیار کئے ہوئے ہیں ، ایسا لگ رہا ہے کہ وہ پاکستان کے وزیراعظم ہیں۔عاپ رہنما نے نشاندہی کی کہ وہ ملک کے وفاقی ڈھانچہ کو برباد کرنا چاہتے ہیں ۔انہوں نے مغربی بنگال میں مرکز کی جانب سے سی بی آئی کے استعمال پر شدید نکتہ چینی کی اور کہا کہ وہ ممتابنرجی کو سلام کرتے ہیں کہ جس طرح انہوں نے سی بی آئی کے عہدیداروں کو بھگایا ۔
صدر ٹوئٹر کی 25 فبروری کو پارلیمنٹ میں طلبی
نئی دہلی ۔ 11 فبروری ۔(سیاست ڈاٹ کام) ایک پارلیمانی کمیٹی برائے انفارمیشن ٹکنالوجی نے صدر مائیکرو بلاگنگ سائیٹ ٹوئٹر کو 25 فبروری کو پارلیمنٹ کی کمیٹی کے صدرنشین انوراگ ٹھاکر کے اجلاس پر حاضر ہونے کی خواہش کی ہے ۔ کمیٹی کے ارکان نے سی ای او ٹوئٹر جیک ڈار سے کی آج کمیٹی کے اجلاس پر غیرحاضری کا سخت نوٹ لیا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں